شہباز شریف نیب کو کیسے چکمہ دینے میں کامیاب گو گیا۔ بلی کے گلے میں گھنٹی باندھے گا کون؟

Abdul Shakoor June 25, 2018 139 No Comments

image

بلی کے گلے میں گھنٹی کون باندھے گا کہیں لوگ سہی کہتے ہیں شہباز شریف کی پشت پناہی خلائ کررھی ھے۔لو جی شہباز شریف کی غضب کرپشن کی عجب کہانی۔

شہباز شریف پہ چھپن کمپنیز میں بہت بڑی کرپشن کے مقدمات ھیں جن میں میرے اعدادوشمار نے جان جوکھوں میں ڈال کر تحقیقات کی ھیں۔اور پورا معاملہ نیب لاھور کو فارورڈ کر دیا ھے۔نیب لاھور نے دو جون کو شہباز شریف کو صاف پینے کے پانی کی کرپشن والے کیس میں بلا رکھا تھا۔شہباز شریف نہ آیا اور نہ اس نے انا تھا۔حلانکہ اس دن چیف جسٹس سپریم کورٹ رجسٹری لاھور میں تھا۔

پھر شہباز شریف کو پچیس سوالوں کا سوالنامہ تھما دیا کہ آرام سے تیاری کرکے پچیس جولائ کو سوالوں کے جواب دے دینا۔کیونکہ یہ ریاست نھیں شہباز شریف کا خالہ کا ویہڑہ(صحن) ھے۔

کل پچیس جولائ تھی شہباز شریف نے نیب لاھور میں پیش ھو کر پچیس سوالوں کے جواب دینا تھے۔وہ نہ کل پیش ھو اور نہ ہی اس نے پیش ھونا تھا کیونکہ نیب لاھور میں جتنے بھی اہلکار بیٹھے ہیں وہ شہباز شریف کے پالتو غلام ھیں۔کسی کی جرات ھے شہباز شریف لو ھاتھ ڈال سکے۔

شہباز شریف نیب لاھور میں حاضر ھونے کی بجائے اپنے لاو لشکر کے ساتھ کراچی چیمبر آف کامرس پہنچ گیا تاکہ تاجر اور صنعتکار حضرات کو پچھلے پانچ سال فائدہ پہنچایا ھے اس کو کیش کیا جائے۔

شہباز شریف نے نیب لاھور میں جواب داخل کروایا ھے میں ایک بہت بڑی سیاسی جماعت لا سربراہ ھوں اور عام انتخابات سر پہ ھیں لہذا عام انتخابات کے بعد مقدمات کو چھیڑا جائے۔

نیب لاھور نے شہباز شریف کی مان لی اور شہباز شریف کے چھپن کمپنیز کے مقدمات عام انتخابات کے بعد کھولنے کا عندیہ شہباز شریف کو دے دیا۔

عام انتخابات کے بعد شہباز اگر جیت جائے گا کوئ مائ کا لال اس کو چھو سکے گا۔؟

اب عوام کی طرف سے یہ صدایئں بھی گونج رہی ھیں کہ شہباز شریف کو خلائ مخلوق کی پشت پناہی حاصل۔پچھلے دنوں شہباز کور کمانڈر لاھور کو جب مل کے آیا ھے۔یہ شیر ھوگیا ھے۔

شہباز شریف اگر عام انتخابات جیت گیا جو لگتا ھے جیت جائے گا پری پلانڈ ھے۔تو یہ کوئ انصاف نھیں دے گا۔اگر معجزاتی طور پر یہ ھار گیا تو نیب لاھور کو بولے کہ میرے ساتھ دھاندلی ھوئ ھے میں دھرنے کررھا ھوں میں دستیاب نھیں ھوں۔مجھے وقت دیا جائے اس طرح چھپن کمپنیز کا حساب وڑ گیا۔

اب سوچنا یہ ھے احتساب کرے تو کون کرے احتساب کے تمام ادارے ھاوس آف شریف کے پالتو غلام ھیں۔تو بلی کے گلے میں گھنٹی باندھے گا کون؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *