ماڈل ٹاون کے مقتولین کا فیصلہ ابھی تک کیوں نہیں ھورھا اور طاھر القادری ھر بار پیسے لیکر کیوں نکل جاتا ھے

Abdul Shakoor June 12, 2018 239 No Comments

image

علامہ طاھر القادری بہت بڑا فراڈ جھوٹا اور ڈرامے باز بندہ ھے ویسے تو قصہ طویل ھے لیکن چاچا عبدالشکور آپ کو مختصر کرکے بتاتا ھے۔طاھر نواز شریف کے باپ کے ھاتھ لگا تھا اسی کی دھائ میں۔میاں شریف اس کو اس کے گاوں سے لاھور ماڈل ٹاون لے آیا یہ طاھر بہت لالچی بندہ ھے یہ نواز شریف کے گھر کے لئے سبزی وغیرہ ماڈل ٹاون مارکیٹ سے لایا گرتا تھا میاں شریف اس کو یاماھا اسی 80 موٹر سائیکل دے رکھی تھی۔ اسی ماڈل ٹاون مارکیٹ میں مشہور تجزیہ نگار حسن نثار دھی پھلے کی ریڑھی بھی لگاتا تھا۔

 

ماڈل ٹاون میں ھندووں اور سکھوں کی چھوڑی ھوئ چار چار کنال کی حویلیاں تھیں جس میاں شریف آہستہ آہستہ قبضہ کرتا جارھا تھا۔چار چار کنال کی فری کی حویلیاں وہ بھی لاھور میں دیکھ کر اس کے منہ میں پانی بھر ایا۔اس نے بھی ایک حویلی کی فرمائش کردی اس وقت ماڈل ٹاون کا مہتمم سعید مہدی ھوتا تھا جو آج کل چیئر مین سوئ ناردرن گیس ھے اور ھاوس اف شریف کا وفادار کتا ھے۔طاھر کو ایک حویلی دی گئ پر اس نے قبضہ 3 حویلیوں پہ کر لیا۔مطلب 4 کنال کی بجائے 12 کنال پی قبضہ کرلیا کیونکہ میاں شریف قبضہ مافیا تھا اور یہ طاھر الفراڈری میاں شریف کا پالتو تھا اسے کون روکے ۔

 

مراعات کھلیاں صوابدیدی فنڈز کھلے طاھر تو اوکات بھول گیا ملک کے طول عرض میں اس کے جھوٹ اور چرب زبانی کا جادو سر چڑھ کر بولنے لگا اپنے قائرین کی مصروفیات کا خیال رکھتے ھوئے چاچا عبدالشکور اجمل بہت مختصر کرتا جارھا ھے۔

 

طاھر القادری کے اندرون ملک اور بیرونی ممالک بڑے بڑے جلسے اور اجتماعات کروائے جانے لگے دریں اثنا اس فراڈیئے نے انگلستان اور کینڈا کی شہریت بھی بھاری قیمت ادا کرکے خرید لی۔اصل بات پہ اجاو ماڈل ٹاون کا سانحہ ھوگیا 14 لاشیں گر گیئں دھرنا دیا دھرنا ختم زرداری وقت دھرنا ھو یا ڈی چوک والا دھرنا ھو خرچہ پانی جاتی عمرہ سے آتا تھا قصہ مختصر اب جب ھاوس اف شریف کا سورج غروب ھونے جارھا ھے یہ اس وقت پاکستان میں ھے اپنے 14 مقتولین 200 پھٹر لوگوں کے لئے عدالت کیوں نھیں جاتا کیونکہ یہ ھاوس اف شریف کا وفادار ھے یہ ھر بار اس چور ٹبر کو بچانے آتا ھے نواز شریف کی ماں شمیم اختر شریف چوری کئے ھوئے غریبوں کے مال سے رمضان المبارک میں بہت خیرات کرتئ ھے یہ بھی اس بار پھر ھر بار کی طرح خیرات لینے گیا۔

 

پچھلے سال جب خیرات لینے گیا تو شہباز شریف کی بیوی تہمینہ درانی نے اپنے ھاتھوں سے اس کا منہ کالا کیا مطلب خیرات دی چوری کے مال سے چور کو خیرات واہ پاکستان اور پاکستانیوں کیا ھے تمھاری بات اب بھی یہ خیرات لیکر نکل جائے گا ماڈل ٹاون کے مقتولین کا فیصلہ نہیں لے گا کیونکہ یہ فیصلے کی بجائے مال لے چکا ھے یہ ھاوس اف شریف کا پالتو ھے ان جیسا ہی بدزات ھے۔`

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *