یب کی عدالت میں پیشی کے بعد سابق نااھل وزیر اعظم نواز شریف کی صاحب زادی اپنے لاو لشکر کے ساتھ پریس کانفرنس کررھی تمام پاکستان کا سرکاری اور غیر سرکاری میڈیا پھولن دیوی کی پریس کانفرنس لائیو دکھا رھا تھا۔۔۔

Abdul Shakoor June 24, 2018 208 No Comments

image

نیب کی عدالت میں پیشی کے بعد سابق نااھل وزیر اعظم نواز شریف کی صاحب زادی اپنے لاو لشکر کے ساتھ پریس کانفرنس کررھی تھی تمام پاکستان کا سرکاری اور غیر سرکاری میڈیا پھولن دیوی کی پریس کانفرنس لائیو دکھا رھا تھا۔


میری بھی اچانک ٹی وی پہ نظر پڑی تو مریم نواز شریف کی پریس کانفرنس لائیو دکھائ جارھی تھی میں مسمی عبدالشکور اجمل ان کو کسی کو سننے میں ہرگز ھرگز دلچسپی نہیں رکھتا۔کیونکہ یہ جھوٹے مکار اور عقل و غیرت سے عاری لوگ ہیں بس مجھے اپنے قارئین کو یہ بتانا ھے کہ کبھی بھول کے بھی تکبر نہ کرنا۔


مریم نواز شریف کی کے تکبر یا حماقت پہ بات کرنا اتنا ضروری نھیں جتنا میرے پیار کرنے والوں کو تکبر اور حماقت سے بچانا ضروری ھے۔کیونکہ انسان جتنی عاجزی انکساری میانہ روی اختیار کرے گا اتنا ہی عظیم ھوگا۔


تکبر انسان کو اس طرح کھا جاتا جیسے آگ سوکھی لکڑی کو کھا جاتی ھے۔بات ھوئے جارھی تھی نواز شریف کئ لڑکی مریم نواز شریف کی پلانٹڈ پریس کانفرنس پہ جو وہ اور اس کا باپ ہر پیشی کے بعد نیب عدالت کے باھر یا سپریم کورٹ کے باھر اپنے درباریوں کے ساتھ لاو لشکر کے ساتھ کیا کرتے تھے۔


میں اور میرے سمیت پورا ملک دیکھ رھا ھے کہ یہ پورا ٹبر چور بھی جھوٹا بھی ھے پھر بھی گالیاں افواج پاکستان کو ججوں کو دے رھے ھیں۔سب کو زیر دباو لانے کے لئے پریس کانفرنس پروٹوکول ایک تو چور اوپر سے چتر۔


خیر جو الفاظ متکبرانہ لہجے میں مریم کے منہ سے ادا ھوئے وہ یہ تھے کہ ھم حکمران بس یہ لفظ سنتے ہی میرا ماتھا ٹھنکا تو میں نے اپنے روایتی انداز میں بول دیا “میاں جی تسی سارے ای یدھے گئے او “


لو جی اس دن کے بعد نواز شریف کا زوال شروع ھو گیا ھے وہ دن ھے اور آج کا دن ھے چالیس سال تک پاکستان کے سیاہ و سفید کا مالک شریف خاندان دینا کے پانچ براعظموں میں پراپرٹیز کا مالک خاندان دنیا کے سات براعظموں میں منہ چھپاتا پھر رھا ھے۔خوار ھوتا پھر رھا ھے۔


لہذا عزیز ھم وطنوں کبھی تکبر نہ کرنا کبھی حماقت نہ کرنا دوسرے انسان کو بھی اپنے جیسا انسان سمجھنا میں مسمی چاچا عبدالشکور اجمل نے بڑے بڑے برج لڑھکتے دیکھے ہیں تازہ اور زندہ مثال ھاوس آف شریف ھے۔عروج کو زوال ایسے ھوتا ھے۔


عجز و انکساری و میانہ روی انسان کا بہترین اثاثہ ھے۔آج دنیا کے پانچوں براعظموں میں اثاثوں والے خوار ھو رھے ھیں اور عاجز اور فقیر اللہ کا شکر ادا کر رھے ھیں ۔یہ تھی ھاوس آف شریف کی عروج سے زوال تک کی کہانی۔

غرور کا سر نیچا ھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *