کلثوم نواز شریف زندہ یا مردہ اصل کہانی ھے کیا؟

Abdul Shakoor June 22, 2018 431 No Comments

image

کلصوم مر گیئ مر گئی یا بچ گیئ بچ گئی ڈرامے کے پیچھے نواز شریف کے مقاصد کیا ھیں؟ تو سنو جناب ویسے تو نیب عدالت ایک کا جج محمد بشیر نیب کا چیئر مین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نیب کا پراسیکیوٹر پوری سپریم کورٹ اسلام آباد ھائ کورٹ کے بکاو ججز نواز شریف کی جیب میں ھیں پھر نواز شریف کو ایک خوف ھے اس کو سزا ھوجائے گی۔

ایسا کچھ ھونے والا نھیں بس ویسے ہی چور کو اپنا پالا ھوتا ھے اور منہ کالا ھوتا ھے۔بس اسی خوف سے نواز شریف اور مریم سب ڈرامہ کررھے ھیں کہ اگر کیسز اپنے منطقی انجام کو پہنچ جاتے ھیں جو مجھے لگتا نھیں کیونکہ مقدمات کو بہت کمزور کردیا گیا ھے۔

فرض محال اگر نواز شریف مریم ببلو شبلو اور کیپٹن صفدر لنگڑے کو سزائیں ھو بھی جاتی ھیں تو ان اس وقت عدالتوں میں ان کا پیش ھونا ضروری ھے جب تک یہ پیش نھیں ھوتے عدالتیں سزائیں نہیں سنا سکتی۔

یہ پیچ و خم زیر و بم انہی عدالتوں اور نیب کے ججز نے ان کو سکھایے ھیں اور نواز شریف سے بہت پیسے کھائے ھیں۔اسی لیے یہ لوگ اب ڈرامہ کررھے ھیں کہ اگر کیسز اپنے منطقی انجام کو پہنچ جاتے تو یہ رگڑے جایئن گے بہتر ھے کہ گرمیوں کے سخت دن لندن کی ٹھنڈ میں گزارے جائیں۔

نواز شریف کو ڈر ھے کہ اگر کسی آفیسر کی غیرت جاگ گئی میاں نواز شریف اور اس کا خاندان لوڈ شیڈنگ کے عذاب کے ساتھ جیل کی سلاخوں کے پیچھے ھوگا۔

ایک مہینہ لندن میں ٹھنڈ میں گزاریں گے جولائ کے وسط میں کلثوم کو ماریں گے عام انتخابات میں عوام کی ھمدردی حاصل کریں گے ادارے بالخصوص نیب ھائ کورٹ سپریم کورٹ مکمل اظہار یکجہتی کریں گے نواز شریف کے ساتھ۔

ایسے نواز شریف وہی کھیل کھیلنے جارھا ھے جو زرداری نے اپنی بیوی کے ساتھ کھیلا تھا اور نواز شریف عام انتخابات جیت کر پھر من مانیاں کرے گا عدالتوں کے جج نواز شریف کو اسی ڈر سے ھاتھ نھیں لگا رھے۔

جیسے نہال ھاشمی نے کہا تھا نواز شریف کا احتساب کرنے والو تم پہ پاکستان کی زمین تنگ کردی جائے گی جج حرامخور ڈرے ھوئے کہ نواز شریف کہیں واقعی زمین تنگ نہ کر دے۔

ویسے عزیز ھم وطنوں جو چیف جسٹس بابا سوموٹو نہال ھاشمی کا دالال کا دانیال کا بال بانکا نہ کر سکا وہ نواز یا مریم کی طرف اونچی نگاہ کرکے دیکھنے کی جسارت کیسے کر سکتا ھے بھلا۔

الغرض یہ سارا ڈرامہ کلثوم زندہ یا مردہ نیب سپریم کورٹ اسلام آباد ھائ کورٹ کے ساتھ ملکر رچایا جارھا ھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *