سینٹرل لندن تو کیا میرئ تو پاکستان میں بھی کوئ پراپرٹیز نھیں۔

Abdul Shakoor June 23, 2018 251 No Comments

image

سینٹرل لندن تو کیا میری تو پاکستان میں کوئ پراہرٹیز نھیں۔ اب جب مریم نواز شریف نے عام انتخابات میں حصہ لینے کے لئے اپنے کاغذات حرامزدگئ جمع کروانے گئی تو ریٹرننگ آفیسر نے پوچھنے کی جسارت کیوں نہیں کی کہ محترمہ تم تو بولتی تھی سینٹرل لندن تو کیا میری پاکستان میں بھی کوئ پراپرٹیز نھیں۔

یہ ریٹرننگ آفیسر مریم نواز شریف تو کیا کسی سے بھی کوئ ایسا سوال نھیں کریں گے جس سے ان ریٹرننگ افسران کے منہ کو لگا حرام چھوٹ جائے۔نھیں مریم نواز شریف کو جھوٹ بولنے کی پاداش میں اندر کیا چا سکتا تھا۔

پر مریم نواز شریف کو اندر کون کرے یہ سارا کرپٹ نظام مریم نواز شریف کا کانا ھے۔سب کرپٹ اور راشی سرکاری افسران کے ویک پوایئنٹس مریم کے پاس موجود ھے مجال ھے کوئ ان کے آگے پر بھی مار جائے۔

مریم نواز شریف تو کیا جو اثاثے الیکشن کمیشن میں بلاول بھٹو زرداری یا بختاور بھٹو زرداری یا آصفہ بھٹو زرداری نے ظاہر کئے ھیں کسی ریٹرننگ آفیسر میں اخلاقی جرات ھے کہ بلاول کو پوچھے کہ تم نے تو آج تک تنکا توڑ کے دوہرا نھیں کیا یہ اربوں کے اثاثے کہاں سے آئے۔

کہاں سے آئے یہ جھمکے کس نے دئے یہ جھمکے بختاور بھٹو زرداری یا آصفہ بھٹو زرداری کو پوچھو تمھارے پاس اربوں کے اثاثے کہاں سے آئے کیا تمھارے پاس کوئ اکہتری یا بہتری آتے تھے جیسے مریم نواز شریف کو تحفے تحائف دے جاتے تھے کیا تمھیں بھی۔

پر پوچھے گا کون بلی کے گلے میں گھنٹی باندھے گا کون۔جنہوں نے سب استفسار کرنا ھے وہ سب حرامخور ساتھ ملے ھوئے یہ ریٹرننگ آفیسر پوچھیں گے جن کی سب کی کوئ نہ کوئ کمزوری مریم نواز شریف زرداری یا ملک ریاض چڑے کے پاس پڑی ھے۔

کمزوری سمجھتے ھیں نہ آپ کوئ رشوت لینے کے ثبوت کوئ غیراخلاقی ویڈیو شیڈیو۔الغرض یہ عام انتخابات 2018 پاکستان تو کیا دینا کی تاریخ کے بکواس ترین انتخابات ھونگے۔

جاگو پاکستانیوں ایسا نہ ھو کہ پھر پچھتانے کا بھی وقت نہ رھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *